پاکستان

ڈسٹرک ویسٹ میں کچرا نہ اٹھانے پر سیاسی کشیدگی شدت اختیار کر گئی

کراچی(رپورٹ : عنایت کابلگرامی) ڈسٹرک ویسٹ کے تمام ٹاو¿نز میں کچروں کا ڈھیر ، کچرا نہ اٹھانے پر سیاسی کشیدگی شدت اختیار کرگئی ،پی ٹی آئی ،پی پی پی اور ایم کیوایم کا ایک دوسرے پر الزامات ، چینی کمپنی روجیانگ گروپ بھی غائب ، سالڈویسٹ بورڈ کہاں ہے عوام ، تفصیلات کے مطابق کراچی کے دیگر اضلاع کی طرح ڈسٹرک ویسٹ میں بھی کچرا اُٹھانے کا ٹھیکہ چینی کمپنی روجیان گروپ کو دیاگیا تھا ، لیکن اس وقت ڈسٹرک ویسٹ کے تمام ٹاو¿نز میں کچروں کا ڈھیر لگا ہوا ہے ، ضلع غربی کے تمام پانچ ٹاو¿نز اور تمام پانچوں ٹاو¿نز کے 54یوسیز میں کچروں کی انبار لگے ہوئے ہیں، اس حوالے سے جب آزاد ریاست کی ٹیم نے سندھ حکومت کے مقامی رہنما پیپلز پارٹی کے ویسٹ کے جنرل سیکرٹری علی احمد جان سے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ چیئرمین ویسٹ کی ناکامی ہے جس کی وجہ سے ضلع غربی میں کچروں کے انبار لگ گئے ہے، ایم کیو ایم اور پی ٹی آئی کے گٹھ جوڑ کے باجود ضلع غربی کے تمام مسائل جوں کے توں ہے ، اظہار احمد اور اس کی ٹیم چینی کمپنی ر وجیانگ گروپ کو کام نہیں کرنے دے رہی تھی جس کی وجہ سے ٹھیکہ منسوخ ہوا ، مزید کہا کہ اگر چینی کمپنی کچرا نہیں اُٹھا رہی تھی تو ڈی ایم سی ویسٹ کے پاس بھی ذاتی کئی گاڑیاں ہے جس میں کچرااُٹھایا جاسکتا ہے ، انہوں نے الزام عائد کیا کہ کچرا اُٹھانے والی گاڑیوں کے لیے ڈیزل کی مدمیں ماہ وار 44لاکھ روپے دے رہی ہے سندھ حکومت ڈی ایم سی ویسٹ کو وہ کہا جارہے ہیں،علی احمد جان نے مزید کہا کہ چیئر مین و وائس چیئرمین ضلع غربی ناکام ہوچکے ہے وہ استعفیٰ دیں یا کچرا اٹھائے ورنہ ہم احتجاج کریں گے۔ تحریک انصاف کے رہنما اورps 120کے ایم پی ائے نے آزاد ریاست کو بتایا کہ سالڈویسٹ کے ایم ڈی اوروزیر بلدیات سعید غنی ناکام ترین شخص ہے ،ان کا چائنا کمپنی کے ساتھ کمیشن پر تنازع چل رہاتھا جس کی وجہ سے چائنا کمپنی نے بیک اپ کیا۔ ہم وزیراعلیٰ سندھ سے مطالبہ کرتے ہے کہ وہ فوری طور پر سعید غنی سے قلم دان لیکر کسی اہل شخص کو دیں۔سعید آفریدی نے مزید کہا کہ اگر ایک دو روز میں کچرا نہیں اٹھا تو ہم خودسوزوکیوں میں بھر کر وزیراعلیٰ ہاﺅس کے گیٹ پر پھینک آئیں گے ۔جب آزاد ریاست کی ٹیم نے ڈسٹرک ویسٹ کے چیئرمین اظہار احمد سے معلومات لی تو انہوں نے کہا کہ علی احمد جان کو کیا پتہ وہ اپنے بڑوں سے پوچھے ، ڈی ایم سی ویسٹ سے تمام گاڑیاں لے لی گئی ہیں، میرے چیئرمین بننے سے پہلے ہی روجیانگ گروپ کوٹھیکہ دیا گیا تھا ، یہ غلط ہے کہ ہم ان کے کام میں رکاوٹ بن رہے تھے ، چلو مان لیا ہم رکاوٹ ہے تو ملیر میں تو پیپلز پارٹی کا چیئرمین ہے وہاں کون رکاوٹ ہے؟ پیپلز پارٹی کی وجہ سے سندھ کی شہری علاقوں کی بلدیاتی صورت حال ابتر ہو چکی ہے،کچرا اُٹھانے میں سب سے بڑی رکاوٹ پیپلز پارٹی کی صوبائی حکومت ہے، ہم نے پانچ چھ رو ز پہلے ایم ڈی سالڈ ویسٹ و وزیر بلدیات سعید غنی سے اس بارے میں تفصیلی گفتگو کی تھی تو انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ ایک دو دن میں مسائل کو حل کرتے ہیں ، لیکن تاحال کچھ بھی نہیں ہوا ۔ پی ٹی آئی، پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم کی ایک دوسرے کو نیچا دیکھانے کی اس سیاسی جنگ میں نقصان عوام کا ہی ہوگا، کچروں سے اٹھنے والے تعفن سے عام عوام ہی متاثر ہے ، ضلع غربی میں کچرے کے معاملے پر عوام نے احکام بالا سے ایکشن لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close