تازہ ترینپاکستان

شہرقائد کی سیاست کا اونٹ کسی کروٹ نہیں بیٹھ رہا

ایک طرف مصطفی کمال کی سیاست کا سورج غروب ہوگیا ، عشرت العباد کا ستارہ دوبارہ چمک اٹھا٭پاک سرزمین پارٹی کے بڑے بڑے نام اڑان بھرنے کو ہیں تیار، کسی کے اشارے کا ہے انتظار

کراچی(تجزیاتی رپورٹ:مزمل احمد فیروزی) کراچی کی سیاست کا اونٹ کسی کروٹ نہیں بیٹھ رہاہے فاروق ستارکراچی کی سیاست میں پیالی میںطوفان مچاتے رہے ہیں اب ایم کیو ایم سے وابستہ اور 14 سال سندھ کے گورنر رہنے والے ڈاکٹر عشرت العباد نے پی ایس پی رہنماﺅں سے ملاقات کر کے دوبارہ سیاست میں واپسی کا عندیہ دیا ہے۔ سابق گورنر نے دو برس قبل نومبر میں پاکستان چھوڑا تھا۔پاک سرزمین پارٹی کے سینیئر وائس چیئرمین انیس ایڈوکیٹ نے گزشتہ دنوں دبئی میں ڈاکٹر عشرت العباد سے ملاقات کی جس کی تصدیق دونوں رہنماﺅں نے کردی ہے۔انیس ایڈوکیٹ کے مطابق ڈاکٹر عشرت العباد سے ملاقات پارٹی قیادت کو اعتماد میں لینے کے بعد کی گئی۔ تاہم ذرائع کچھ اور ہی کہہ رہے ہیں۔پی ایس پی رہنما کے مطابق ملاقات کا مقصد دیرینہ ساتھی کے ساتھ تعلقات دوبارہ معمول پر لانا تھا۔پاک سر زمین پارٹی کے رہنما نے بتایا کہ ڈاکٹرعشرت العباد کو اپنی پارٹی میں دیکھنا چاہتا ہوں، اگر وہ مان جائیں تو اپنی جماعت کو ان کی شمولیت کے لیے رضامند کرلوں گا جبکہ چیئرمین پاک سرزمین پارٹی مصطفی کمال عشرت العباد سے اپنی نفرت کا اظہار کرتے رہے ہیں، وہ کئی بار سابق گورنر کو رشوت العباد کے نام سے مخاطب کرتے رہے ہیں اور یہ بھی کہتے رہے ہیں کہ سابق گورنر کبھی رشوت کے بغیر کوئی کام نہیں کرتے تھے۔ناصرف یہ بلکہ مصطفی کمال نے یہ الزام بھی عائد کیا کہ ڈاکٹرعشرت العباد نے 22 اگست 2016 کو الطاف حسین کی پاکستان مخالف تقریر کے بعد بھی بانی متحدہ سے تعلقات برقرار رکھے تھے ایک اندازے کے مطابق پاک سرزمین پارٹی چلانے کی مصطفی کمال کی حکمت عملی ناکام ہوگئی ہے جبکہ رہنماپارٹی چیئرمین کو انتخابات میں ناکامی کا مورودِالزام ٹہرا رہے ہیں کیونکہ مصطفی کمال نے بلاضرورت ایم کیو ایم کے حامیوں کو مشتعل کیاحالانکہ لوگوں کے لیے الطاف حسین کو بھلانا آسان نہیں تھا، جنھوں نے 25 سال تک پارٹی کو ملک سے باہر بیٹھ کر چلایا،سیاسی مبصرین کے مطابق مصطفی کمال کی سب سے بڑی غلطی یہ تھی کہ انھوں نے مہاجروں کی حمایت ترک کرنے کو کہا اور اپنے تشخص سے بڑا کام کرنے کی ٹھانی۔ پی ایس پی میں میں شامل ہونے والے ایم کیوایم کے کئی سابق عہدے دار سیاسی صورتحال کا باریک بینی سے جائزہ لے رہے ہیں اگر حالات موافق نہ ہوئے اور مصطفی کمال نے پارٹی پر اپنی گرفت کھودی تو پی ایس پی کے بڑے بڑے نام اڑان بھرنے کو تیار ہیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close